شعبان کے آخری 15دنوں میں یہ آیت دو بار پڑھ لو تقدیر بدلتی خود دیکھ لوگے گھر میں دولت کا سیلاب آئیگا ،پورا سال آفتوں بلاؤں سے حفاظت

سال کے بار ہ مہینوں میں سے رمضان تو ایسے مہینہ تھا جس کے روزے فرض تھے ۔ آپ ﷺ کا پورا کا پورا مہینہ روزے رکھتے لیکن بقیہ گیارہ مہینوں میں سب سے زیادہ روزوں کا اہتمام آپ ﷺ شعبان میں فرماتے تھے ۔ آخر کا ر کو ئی سبب اور وجہ تو ہوگی۔ جو ماہ شعبا ن کو ایسی بزرگی اور فضیلت دی گئی۔ اس مہینے کی فضیلت کی بنیا دی وجہ یہ ہے کہ اسی ماہ مبارک وہ مبارک رات بھی آتی ہے۔ جسے “شب برات ” کے نام سے موسوم کیاجاتاہے۔ امام بہیقی ؒ شیعب الایمان میں حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا سے روایت کرتے ہیں کہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا: جبرائیل ؑ میرے پاس آئے اور مجھے کہا یا رسول اللہ ﷺ یہ رات پندرھویں شعبان کی رات ہے ۔

اور اس رات اللہ تعالیٰ قبیلہ قلب کی بکریوں کے بالوں کے برابر لوگوں کو جہنم کی آگ سے آزاد فرماتا ہے۔ اللہ رب العزت بعض دنوں بعض پر فضیلت دی ہے ۔ یوم جمعہ کو ہفتے کے تمام ایا م پر، ماہ رمضان کو تمام مہینوں پر قبولیت کے ساعت کو تمام ساعتوں پر ، لیلتہ القدر کو تمام راتوں پر اور شب برات کو دیگر راتوں پر۔ پندرہ شعبان بہت برکت والا دن ہے اس دن صرف یہ پندرہ منٹ کا خاص عمل ہے اس عمل سے آپ جھولیاں بھر سکتے ہیں ۔ کیا معلوم آنے والا پندرہ شعبان ہماری زند گی میں آئے یا نہ آئے۔ اس رات کو جو یہ عمل کرے گا اللہ کریم اس کی جھولیاں بھر دے گا۔ ہر پریشانی اور تنگیوں میں آسانیاں پیدافرمائے گا۔ بیماریوں اور بلاؤں اور آفتوں سے اللہ کریم حفاظت فرمائے گا۔ آپ نے اس رات کرنا یہ ہے کہ آپ نے سچے دل کے ساتھ ندامت میں ڈوب کر اپنے آپ کو مجرم تصور کرتے ہوئے کم از کم سو مرتبہ استغفار پڑھنا ہے۔ استغفار کے الفاظ یہ ہیں ۔” استغفراللہ الذی لا الہ الا ھو الحی القیوم واتوب الیہ”۔اس کے بعد پوری امت رشتہ داروں حتی ٰ کہ دشمنوں کا بھی تصور کریں۔ جس کیفیت سے آپ دعا مانگیں اسی کیفیت سے ان کے لیے بھی دعاضرور مانگیں ۔انشاءاللہ آپ کو اس عمل سے فائدہ یہ ہوگا کہ آپ کی مرادیں پوری ہوں گی۔ آپ کی پریشانی دور ہوگی۔

اور اللہ پاک آپ کو بیماریوں ، آفتوں اور بلاؤں سے حفاظت فرمائے گا۔ اور عام زندگی میں اس کے مزید فوائد یہ ہوں گے۔ کہ استغفار خزانہ غیب سے رزق دلواتا ہے۔ کچھ نہ کریں ایک تسبیح صبح وشام استغفار کی کرلیں۔ کوئی استغفار نہیں آتا تو صرف استغفراللہ تو پڑھ سکتے ہیں۔ اور ایک تسبیح پڑھنے میں کونسا وقت لگتا ہے۔ اگر تسبیح نہیں ہے تو انگلیوں پر پڑ ھ لیا کریں۔ جو استغفار کو لازم کرلیتاہے ۔ رب اسے غیب کے خزانے سے دیتا ہے۔ اپنے زندگی کو ان اعمال کے ساتھ لگائیں ۔ اللہ ایسی جگہ سے رزق عطا کردیتا ہے جہاں سے گمان نہیں ہوتا۔ بے گمان رزق عطا فرماتے ہیں۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *