کتنی عمر میں حیض آنا شروع ہوتا ہے، بچیوں کویہ بات لزمی معلوم ہونی چاہئے

حیض شروع ہونے کی عمر کم ازکم 9 سال اور زیادہ سے زیادہ 20 یا 21 سا ل ہے۔ یہ کمی وبیشتی، صحت، ماحول ، غذا اور علاقائی آب وہوا پر منحصر ہے۔ عرب جیسے گرم ملکوں میں 9 سال کی عمر میں ہی حیض آنے لگتا ہے۔ جبکہ ٹھنڈے ملکوں میں 18 سے 21 سال کی عمر میں حیض کی شروعات ہوتی ہے۔ معتدل آب وہوا کے ملکوں میں 13 سا ل سے لے کر 16 سال کی عمر تک میں حیض آنا شروع ہوتا ہے۔جن خاندانوں میں لڑکیوں میں تعلیم ، بے پردگی اور آزادی ہوتی ہے ناول ورسائل و اخبار پڑھے جاتے ہیں اور فلمیں دیکھی جاتی ہیں وہاں چھوٹی عمر ہی میں لڑکیوں کے دماغ میں برے خیالات گھومنے لگتے ہیں اور وہ مرد و عورت کے جنسی تعلقات کی باتوں کی متلاشی ہو جاتی ہیں۔ ایسی لڑکیوں میں بھی حیض کی شروعات جلد ہوتی ہے۔ اسی طرح جن لڑکیوں کی غذا میں گوشت انڈے ، مچھلی اور گرم و مقوی غذاؤں کی بہتات ہوتی ہے ان کو بھی حیض جلد آنے لگتا ہے۔ہند وپاکستان میں اگر 16-17 سال کی عمر تک لڑکی کو حیض کی شروعات نہ ہوتو والدین کو کسی ہوشیار ڈاکٹر سے مشورہ حاصل کرنا چاہیے۔

اگر 15 سال کی عمر تک لڑکی کو حیض شروع نہ ہوتو بھی اس کو شریعت میں بالغ سمجھا جائےگا۔ اگرکسی لڑکی کا باوجود علاج کے حیض جاری نہ ہو یا خون کا معمولی سا دھبہ آئے۔ مقام مباشرت مسدودہو تو پھر ان کے بارے میں مفتی حضرات سے شری احکام معلوم کرنا چاہیے۔ اس قس کی عورتوں کے ہاں اولاد نہیں ہوتی ہے اور بعض عورتوں سے شوہر کو مجامعت کرنا دشوارہوتا ہے۔ ایسی عورتوں کا رحم بھی نہ ہونے کے برابر ہوتا ہے خصیتہ الرحم بھی ناقص ہوتے ہیں ایسی لڑکیوں کا رشتہ کرتے وقت اس کمی کو ظاہر کر دینا چاہیے ورنہ بعد میں بڑے مسائل سے دو چار ہونا پڑتا ہے۔اپنے ماہواری کو سمجھنا آپ کو اپنی صحت اور ممکنہ زچگی کے بارے میں باخبر فیصلے کرنے کی سہولت دیتا ہے۔ ماہرین امراض صحت ماہرین اکثر ماہواری کے دوران ماہواری کے پہلے دن کے بارے میں پوچھتے ہیں۔ اس معلوماتاپنے ماہواری کو سمجھنا آپ کو اپنی صحت اور ممکنہ زچگی کے بارے میں باخبر فیصلے کرنے کی سہولت دیتا ہے۔ ماہرین امراض صحت ماہرین اکثر ماہواری کے دوران ماہواری کے پہلے دن کے بارے میں پوچھتے ہیں۔ اس معلومات کو کچھ آسان طریقوں سے دریافت کرنا آسان ہے۔

Sharing is caring!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *